دنیا

ایران سے مذاکرات کے حاصلات بارے کچھ کہنا قبل ازوقت ہوگا،سعودی عرب

سعودی وزارتِ خارجہ کے ایک اعلی عہدہ دار نے ایران سے مذاکرات کی تصدیق کی ہے اور کہا ہے کہ ان کا مقصد علاقائی کشیدگی کا خاتمہ ہے۔ان کا کہنا ہے کہ اس بات چیت کے حاصلات کے بارے میں کچھ کہنا قبل ازوقت ہوگا کیونکہ سعودی عرب قابلِ تصدیق اقدامات دیکھنا چاہتا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق سعودی وزارت خارجہ میں شعبہ پالیسی پلاننگ کے سربراہ سفیر رائد کریملی نے پہلی مرتبہ دونوں ملکوں کے حکام کے درمیان براہ راست بات چیت کی تصدیق کی اورکہاکہ سعودی عرب اور ایران کے درمیان موجودہ مذاکرات کا مقصد خطے میں کشیدگی کے خاتمے کے طریقوں کی تلاش ہے۔انھوں نے کہاکہ ہمیں امید ہے، یہ مذاکرات کامیاب ہوں گے لیکن ان سے کوئی نتیجہ اخذ کرنا قبل ازوقت ہوگا۔ہمارا تجزیہ محض دعووں پر نہیں بلکہ قابل تصدیق اقدامات پر مبنی ہوگا۔انھوں نے اس بات چیت کی تفصیل فراہم کرنے سے انکار کیا لیکن علاقائی حکام اور ذرائع نے بتایا کہ دونوں ملکوں نے یمن میں جاری بحران اور 2015 میں ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان طے شدہ جوہری سمجھوتے کے بارے میں تبادلہ خیال کیا ۔سعودی عرب نے اس سمجھوتے کی مخالفت کی تھی جبکہ امریکا اس میں دوبارہ شمولیت کے لیے ان دنوں ویانا میں ایران سے مذاکرات کررہا ہے۔
٭٭٭٭٭

About the author

Peerzada M Mohin

M Shahbaz Aziz is ...

Leave a Comment

%d bloggers like this: