انٹرٹینمنٹ

صوفی کلام کا اثر دل اور روح پر ہوتا ہے ‘عابدہ پروین

Written by Peerzada M Mohin

صوفی گلوکارہ عابدہ پروین نے کہا ہیکہ میرے اندر اللہ سائیں نے صوفی موسیقی کا رنگ اور شوق ڈالا، صوفی کلام کا دل اور روح پر اثر ہوتا ہے۔میڈیا رپورٹ کے مطابق گلوکارہ نے کہا کہ صوفی کلام میں زبان کو سمجھنے کی کوئی ضرورت نہیں، وہ چاہے عربی میں ہو، سندھی میں ہو، اردو یا فارسی میں مگر اس کا اثر دل پر ہوتا ہے، روح پر ہوتا ہے کیونکہ یہ کلام اللہ کی طرف سے ہے ۔خصوصی انٹرویو میں انہوں نے بتایا کہ انھیں تین برس کی عمر سے موسیقی کا شوق تھا۔ وہ کہتی ہیں صوبہ سندھ کا ماحول درگاہ کا ماحول ہے ۔ سندھ کے لوگوں کا مزاج اور موسیقی بھی درگاہی ہے ۔ میرے والد میں بھی درگاہ کا ایک رنگ تھا جو پھر ہم سب میں آیا ۔میرے والد کا موسیقی کا ایک سکول تھا۔تصوف اللہ کا درد ہے ، آپ کو اس کلام سے روحانیت ملتی ہے ، جیسے اندر ٹھنڈک محسوس ہوتی ہے ، جیسے روح گم ہو جاتی ہے ۔انھوں نے مزید کہا کہ صوفی کلام پڑھنے سے انسان کسی اور ہی دنیا میں چلا جاتا ہے ۔
٭٭٭٭٭٭

About the author

Peerzada M Mohin

M Shahbaz Aziz is ...

Leave a Comment

%d bloggers like this: