جرم

ساہیوال، عطائی کے غلط انجکشن لگانے سے دس سالہ بچی جاں بحق، شہریوں کا احتجاجی مظاہرہ

Written by Peerzada M Mohin

تھانہ غلہ منڈی کی حدود میں میڈیکل سٹور چلانے والے عطائی ڈاکٹراشرف نے غلط انجکشن لگا کر دس سالہ ماہین فاطمہ کی جان لے لی محکمہ ہیلتھ اپنا حصہ لے کر خاموش پولیس نے موقع پر پہنچ کر تفتیش شروع کر دی ۔لکڑ منڈی کی رہائشی دس سالہ ماہین فاطمہ عطائی ڈاکٹر کے غلط انجکشن لگنے کی وجہ سے ہلاک ہوگئی ماہین فاطمہ اپنے بھائی کے ہمراہ خارش کی دوا لینے کے لئے قریبی میڈیکل سٹور پر گئی جہاں پر اشرف نامی عطائی ڈاکٹر نے اسے انجکشن لگایا جو کہ ری ایکشن کر گیا اور فوری طور پر اس کی حالت خراب ہوگئی جسے فوری طور پر ہسپتال لیجایا جا رہا تھا کہ دم توڑ گئی۔ جس پربھائی کے شور شرابہ کرنے پر شہری اکٹھے ہوگئے اور میڈیکل سٹور مالک کے خلاف احتجاج شروع کر دیا تو میڈیکل سٹور عطائی مو قع سے فرار ہو گیا اور لڑ کی لاش کو پولیس نے اپنی تحویل میں لے لیا اور تفتیش شروع کر دی تا ہم عطائی کی ابھی تک گرفتاری عمل میں نہیں آئی محکمہ صحت کے حکام اپنا حصہ لیکر خاموش ہو گئے ،شہریوں نے وزیر اعلیٰ سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔
٭٭٭٭٭

About the author

Peerzada M Mohin

M Shahbaz Aziz is ...

Leave a Comment

%d bloggers like this: