پاکستان

وفاقی انشورنس محتسب کا ادارہ جدید تقاضوں سے ہم آہنگ ہو رہا ہے، ڈاکٹر خاور جمیل

کراچی :وفاقی انشورنس محتسب ڈاکٹر خاور جمیل نے کہا ہے کہ بیمہ پالیسی ہولڈرز کے جائز قانونی حقوق کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لئے ادارے کی آن لائن سروسز میں مزید بہتری لانا وقت کا تقاضہ ہے،کراچی میں فیڈرل انشورنس ایمبڈسمین کے سوشل میڈیا ونگ کا دورہ کرتے ہوئے ڈاکٹر خاورجمیل نے کہا کہ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا وژن ہے کہ پاکستانی جی ڈی پی میں انشورنس انڈسٹری کے ایک فیصد سے بھی کم حصے کو خاطر خواہ بڑھایاجاے،انہوں نے کہا کہ بطور محتسب انہوں نے ۲۰۱۹ میں چارج سنبھالا تو پہلے ہی سال بیمہ پالیسی ہولڈرز کو تقریبا” چارسو ملین روپے کا مانیٹری ریلیف ملا جبکہ ۲۰۲۰ میں ادارے کی شبانہ روز کوششوں سے پالیسی ہولڈرز کو ۲.۱۳ ارب روپے کا مالی فائدہ منتقل ہوا،ڈاکٹر خاور جمیل نے میڈیا کے زریعے عوام میں وفاقی انشورنس محتسب کے ادارے سے متعلق زیادہ سے زیادہ آگئی فراہم کرنے کی ضرورت پر بھی زور دیا،اس موقع پر ڈائریکٹر جنرل وفاقی انشورنس محتسب مبشر نعیم صدیقی نے بریفنگ دیتے ہوے کہا کہ گُذشتہ دو سالوں کے دوران نا صرف کراچی،لاہور،اسلام آباد،ملتان، کوئٹہ،پشاوراورسکھر کے محتسب دفاتر میں بیمہ ہولڈرز کی شکایات کے ازالے کی شرح میں اضافہ ہوا ہے بلکہ ایف آئی او کی ہیلپ لائن، 1082 اور ویب سائٹ پورٹل http//Fio.gov..pk پر بھی وفاقی انشورنس محتسب کے زریعے بیمہ کمپنیز کے خلاف عوامی شکایات کے مفت اور فوری ازالے کی شرح بھی تیزی سے بڑھ رہی ہے،مبشر نعیم صدیقی نے وفاقی محتسب کو بتایا کہ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کی ہدایات کی روشنی میں ملک بھر کے محتسب دفاتر میں وڈیو کانفرنسنگ کے زریعے شکایت کنندگان کی موجودگی میں انشورنس کلیم کے حُصول میں درپیش رکاوٹوں سے متعلق مقدمات کی سماعت کا سلسلہ تیز کر دیا گیا ہے، ڈاکٹر خاور جمیل نے کہا کہ FOIRایکٹ ۲۰۱۳ کے تحت انشورنس آرڈیننس ۲۰۰۰ کی رو سے تشکیل پانے والا وفاقی انشورنس محتسب کا ادارہ انشورنس انڈسٹری میں شفافیت اور پالیسی ہولڈرز کے جائز قانونی حقوق کے تحفظ میں اپنا بھرپور کردار ادا کر رہا ہے تاہم سوشل میڈیا ، ٹی وی چینلز اوراخبارات کے زریعے ادارے کے حوالے سےعوامی آگہی مہم میں مزید تیزی لانے کی ضرورت ہے۔

About the author

Thakur Lahori

Leave a Comment

%d bloggers like this: