پاکستان

یوم پاکستان اور آزادی کشمیر کے حوالے سے سیمینار اور مشاعرہ

ایشین کلچرل ایسوسی ایشن آف پاکستان کی جانب سے یوم پاکستان کے حوالے سے ایک روزہ سیمینار اور مشاعرہ بعنوان” یوم پاکستان اور آزادی کشمیر” کی تقریب الحمراء ادبی بیٹھک شاھراہ قائد اعظم لاہور میں منعقد کی گئی۔ جسکی صدارت معروف شاعر نجیب احمد نے کی۔ جبکہ مہمانان اعزاز نامور شاعر خالد شریف، ناصر بشیر ، رقیہ غزل، نظریہ پاکستان ٹرسٹ کی صفیہ اسحاق اورلیونگ لیجنڈاداکار مسعود اختر سٹیج پر جلوہ افروز تھے۔ نظامت کے فرائض شاعر ،ادیب، کمپئیر اعظم منیر نے ادا کئے۔ تقریب کا آغاز تلاوت قرآن پاک سے کیا گیا۔ اور نعت رسول مقبولﷺ محمد الیاس نے پیش کی۔
ایشین کلچرل ایسوسی ایشن آف پاکستان کے سیکریٹری جنرل و چئیرمین ایوارڈ سلیکشن کمیٹی سید سہیل بخاری نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج یوم پاکستان کے حوالے سے تقریب منعقد کرنے کا مقصد تجدید عہد کرنا ہے اور قائد اعظم کے دو قومی نظریہ کو اجاگرکرنے کے ساتھ ساتھ کشمیری بھائیوں کی آزادی کی جدو جہد کو خراج تحسین پیش کرنا ہے جو اپنے بیٹوں اور بھائیوں کو وطن کی آزادی کے لئے سفید کفن کو سرخ ہوتے ہوئے دیکھتی ہیں اور انکا جذبہ مزید بلند ہوتا ہے۔ ہم اس موقع پر اپنے کشمیر ی بھائیوں کی قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہیں اورباری تعالیٰ کے حضور دعاگو ہیں کہ مقبوضہ کشمیر جلد آزاد ہو جائے۔
اعظم منیر نے مشاعرہ کے آغاز میں اپنا کلام پیش کیا جوکہ یوم پاکستان اور آزادی کشمیر کے حوالے سے تھا جسے حاضرین نے بہت پسند کیا اور سراہا۔ ممتاز شاعرہ، کا لم نگار عارفہ صبح خان نے تقریب کے عنوان یوم پاکستان اور آزادی کشمیر کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ بڑے افسوس کی بات ہے کہ ہماری براداری نے کشمیر کے لئے کوئی خاص کام نہیں کیا ۔ ہمیں خصوصی طور پر کشمیر کی آزادی کے لئے اپنا کام کرناچاہئیے۔ انہوں نے چند اشعار بھی پیش کئے۔ جواں سال شاعرہ ،کالم نگار اور کمپئیرر قیہ غزل نے اپنا کلام پیش کرکے حاضرین کے جذبات کو اجاگر کیا اور یوم پاکستان اور آزادی کشمیر پر بات کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر پاکستان کی شہ رگ اور اٹوٹ انگ ہے۔ ہمیں اپنے کشمیر ی بھائیوں کی جد وجہد پر نظمیں کالم اور دیگر جہاں تک ممکن ہو میڈیا کے ذریعے انکی آزادی کی جدوجہد کو اجاگر کرناہے۔

معروف شاعرہ ،دانشور صفیہ اسحاق سیکرٹری نظریہ پاکستان ٹرسٹ شعبہ خواتین نے اپنا کلام پیش کیا اور خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں مایوس نہیں ہوناچائیے کشمیر ان شا ء اللہ آزاد ہوکر رہے گا۔ شاعر ناصر بشیر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سب اپنا اپنا کام کر رہے ہیں آزادی کشمیر کسی ایک فرد کا کام نہیں ہے بلکہ یہ ہم سب کا فرض ہے کہ جس طرح قرار داد پاکستان پیش کی گئی تھی اسی طرح ہم سب مل کر قرار داد کشمیر بھی پیش کریں اور میں سید سہیل بخاری کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں کہ پہلے انہوں نے 5 فروری کو یوم کشمیر کے حوالے سے تقریب منعقد کی۔ میں سید سہیل بخاری کی اس بات سے اتفاق کرتا ہوں کہ یوم کشمیر 5فروری کو منایا جاتا ہے لیکن اس کے لئے ایک دن نہیں ہونا چاہیئے ۔ جب تک کشمیر آزاد نہیں ہوتا تب تک یوم کشمیر روزانہ منانا چاہیے۔ ناصر بشیر نے یوم پاکستان اور آزادی کشمیر کے حوالے سے دونظمیں پیش کیں اور ان کا کشمیر پرریکارڈ کیا ہوا ترانہ بھی حاضرین کو سنایا گیا۔ شاعر خالد شریف نے کہا کہ ہمارا مقابلہ ایک مکار اور چالاک ہندوستانی قیادت سے ہے۔ یو این او کی قرارداد میں روس نے ہندوستان کے کہنے پر ہمارا ساتھ نہ دیا۔ ہمارے دل سے کشمیر سے جڑے ہوئے ہیں۔ کشمیری بھائی ہم سے دور ضرور ہیں مگر الگ نہیں ہیں۔ انہوں نے سید سہیل بخاری کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا انہوں نے یوم پاکستان کے ساتھ ساتھ آزادی کشمیر پر بات کرتے کے لئے ہم سب کو اکٹھا کیا۔ انہوں نے یوم پاکستان اور آزادی کشمیر پر اپنا کلام بھی پیش کیا۔

لیونگ لیجنڈ اداکار مسعود اختر نے کہا کہ میں یوم پاکستان کے موقع پر کشمیری مجاہدین کو سلام پیش کرتا ہوں انکی جدوجہد کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔ معروف شاعرنجیب احمد نے ا پنے صداررتی خطبہ میں کہا کہ کوئی بھی قوم کوئی بھی شخص جب تک قربانی دینے کے لئے تیار نہیں ہوتا وہ کامیاب نہیں ہوسکتا۔ اور کشمیری 71سال سے قربانیاں دے رہے ہیں۔اب ان کا جذبہ قربانی عود کر گیا ہے،۔انہوں نے کہا کہ مجھے عمران خان کی بات بہت پسند آئی کہ کشمیریوں کے دل سے موت کا خوف ختم ہوگیا۔ اب انکی آزادی کو کوئی نہیں روک سکتا۔ کشمیر آزاد ہو کر رہے گا۔ ہمیں سید سہیل بخاری کے اس جذبہ کو سلام پیش کرنا چاہیے کہ یوم پاکستان کے موقع پر انہوں نے آزادی کشمیر پرسیمینار اور مشاعرہ کا انعقاد کرکے ہمارے جذبہ ایمانی کو تقویت دی ہے۔ نجیب احمد نے اپنا کلام پیش کرکے حاضرین سے خوب داد سمیٹی ۔ دیگر شعراء میں ممتاز راشد لاہوری، اعجاز فیرور اعجاز ، وارث علی وارث اور دیگر شخصیات نے اپنا کلام پیش کیا۔

About the author

Peerzada M Mohin

M Shahbaz Aziz is ...

Leave a Comment

%d bloggers like this: