شفاعت اللہ روکھڑی سرائیکی خطے کے ماتھے کاجھومر،انکی وفات سے سرائیکی گلوکاری یتیم ہو چکی 'ملکو

0

نامور گلوکارملکونے کہا ہے کہ شفاعت اللہ روکھڑی میرے پسندیدہ گلوکاروں میں سے ایک تھے ،اگر انہیںسرائیکی خطے کے ماتھے کاجھومرکہا جائے تو غلط نہ ہوگا ،ان کی وفات سے سرائیکی گلوکاری یتیم ہو چکی ہے ۔ایک انٹرویومیں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بڑے فنکارصدیوںکے بعدپید اہوتے ہیں اوران کے دنیا سے چلے جانے کے بعد ان کا خلاء کبھی پرنہیں کیا جا سکتا۔ انہوں نے کہا کہ مجھے سرائیکی گلوکار ہونے پر فخر ہے ،یہ پنجاب کا ہی کلچرہے جس کی ترویج کے لئے ہر ممکن کردار ادا کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مجھے بس یہ پتہ ہے کہ شارٹ کٹ کامیابی کا نہیں بلکہ تباہی کا فارمولہ ہے اس لئے کبھی اس پر عمل پیرا نہیں ہوا۔ حلال رزق کماناعبادت ہے جب آپ کسی کام کو عبادت سمجھ کر تے ہیں تو کامیابی لازمی ہمارے قدم چومتی ہے۔
٭٭٭٭٭

Leave a Reply

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Subscribe For Latest Updates

Signup for our newsletter and get notified when we publish new articles for free!




%d bloggers like this: