جرم

شجاع آباد میں دلہن گینگ ریپ کیس کا ڈراپ سین

Written by Peerzada M Mohin

ملتان کے علاقے شجاع آباد میں دلہن عظمی نے سہاگ رات کی رات اپنے عاشق اور اس کے ساتھیوں کوخود سسرال بلایا تھا۔

واقعہ کے مطابق ملتان کے علاقے شجاع آباد موچی پورہ کا رہائشی دبئی میں مقیم محمد لطیف شادی کرانے کے لئے وطن واپس آیا تھا۔وہ بارات لے کر لڑکی عظمی سے شادی کر کے واپس گھر پہنچا۔سہاگ رات کی رات 4 مسلح افراد نے اس کے گھر میں داخل ہو کرچھت پر سوئے اس کے بھائی عبدالمجید اور بہنوئی اللہ دتہ کو گن پوائنٹ پر یرغمال بنا کر منہ پر کپڑا اور ہاتھ باندھ کر بیٹھک میں بند کر دیا۔جس کے بعد دلہا دلہن کے کمرے میں داخل ہوکر لطیف کو پسٹل کے بٹ مار کر تشدد کا نشانہ بنا کر لہولہان کردیا اور ہاتھ پاؤں باندھ کر دوسرے کمرے میں بند کردیا۔

جوڑا عروسی میں ملبوس دلہن عظمی کے مطابق کمرے میں چاروں ڈاکوؤں نے اسے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ڈاکو اسے ایک گھنٹہ زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعداس کے ساڑھے چار لاکھ روپے مالیت کے طلائی زیورات،نقدی اور موبائل فون لوٹ کر وہاں سےفرار ہو گئے۔

پولیس نے مقدمہ درج کرکے واقعہ کی تفتیش کی تو ہوشربا حقائق سامنے آگئے کہ محمد لطیف کے گھر دھاوا بولنے والے چاروں ڈاکوؤں نہیں تھے بلکہ اس کی بیوی عظمی کا عاشق اور اس کے تین ساتھی تھے۔جو عظمی کے ساتھ ملی بھگت کرکے اس کے سسرال آئے۔اس نے اپنے عاشق سے منصوبہ بندی کے مطابق گھناؤنا کھیل کھیلااور پھرگینگ ریپ اور ڈکیتی کا ڈرامہ رچادیا۔

زرائع کے مطابق لڑکی کی میڈیکل رپورٹ میں گینگ ریپ نہیں،بلکہ صرف ایک ملزم یعنی لڑکی کے عاشق کا زیادتی کرنا ثابت ہوا ہے۔پولیس نے دلہن کے موبائل ڈیٹا کے ذریعے اس کے عاشق کو ٹریس کیا جبکہ پولیس فرانزک سائنس لیبارٹری سے لڑکی کی فرانزک ٹیسٹ رپورٹ آنے کا انتظار کررہی ہے۔ذرائع کے مطابق پولیس نے مرکزی ملزم کو گیلے وال سےگرفتار کر لیا ہے جبکہ اس کے تین ساتھیوں کی گرفتاری کے لئے چھاپے مارے جارہے ہیں۔

دلہن

دلہن

About the author

Peerzada M Mohin

M Shahbaz Aziz is ...

Leave a Comment

%d bloggers like this: