پاکستان جرم

محنت کش خاتون کو دوران سفر اغوا ء کر کے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنائے جانے کے بعد پھندہ دیکر قتل کرکے لاش کھیتوں میں پھینک دی گئی

لاہور سے نارووال جانے والی محنت کش خاتون کو دوران سفر اغوا ء کر کے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنائے جانے کے بعد پھندہ دیکر قتل کرکے لاش کھیتوں میں پھینک دی گئی ،مقتولہ کی پہچان صابراں سکنہ بند روڈ لاہور کے نام سے ہوئی ہے ۔مظاہرے کی قیادت کرنے والے محنت کش امجد نے بتایا اس کی آٹھ بہنیںہیں ،وہ صابراں کو جمعہ کے روز خود لاہور لاری اڈا سے نارووال جانے والی بس میں بٹھاکر گیا ۔گزشتہ روز مریدکے پولیس سے اطلاع ملی کہ اس کی بہن کی خون آلود پھندا لگی کھیتوں سے لاش ملی ہے جسے نامعلوم افراد نے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد بہمانہ تشدد کرکے پھندا دیکر مار ڈالا اور لاش کھیتوں میں پھینک دی ۔امجد نے بتایا اسکی بہن کے پاس دو موبائل فون اور پانچ ہزار روپے کی نقدی بھی تھی ،دوران سفر اس کی بہن کس طرح اغوا کی گئی کن لوگوں نے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا اور بہمانہ تشدد کرکے پھندا دیکر مار کر کھیتوں میں پھینکا وزیر اعلی پنجاب اسکی تحقیقات کروائیں اور انصاف دلوائیں ۔وہ سائیکل پر پھیری کرکے محنت مزدوری کرکے بہنوں کا پیٹ پالتا ہے ۔ اس نے بتایا اس کی بہن طلاق یافتہ تھی اور کسی کے گھر میں کام کرکے پیٹ پالتی تھی اس سلسلہ میں جب مریدکے پولیس سے موقف لیا گیا تو تفتیشی سب انسپکٹر افتخار نے بتایا ابتدائی طور پر مقتولہ صابراں سے اجتماعی زیادتی اور بہمانہ تشدد کرکے پھندا دیکر قتل کرنے کی تصدیق ہوچکی ہے تاہم حتمی رپورٹ پوسٹ مارٹم سے قتل کی اصل وجہ اور دیگر انکشافات سامنے آئیں گے ،مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی گئی ہے اور اس بس کا سراغ لگایا جارہا ہے جس میں لاہور سے مقتولہ صابراں سوار ہوکر نارووال جارہی تھی ،جلد ہی قاتلوں کا سراغ لگالیں گے۔
٭٭٭٭٭

About the author

Peerzada M Mohin

M Shahbaz Aziz is ...

Leave a Comment

%d bloggers like this: