پاکستان

ریلوے کو 11 ماہ میں اسکریپ کی فروخت سے 1ارب 7کروڑ روپے سے زائد کی آمد

محکمہ ریلوے نے اسکریپ کی فروخت کی مد میں کروڑوں روپے کا ریونیو اکھٹا کر لیا، مالی سال 21-2020 کے لیے ریلوے کو اسکریپ کی مد میں 1ارب روپے آمدنی کا ہدف دیا گیا تھا جبکہ ریلوے نے11 ماہ میں ہی 1ارب 7کروڑ روپے سے زائد کا ریونیو اسکریپ کی فروخت سے حاصل کر لیا۔وزیر ریلوے اعظم خان سواتی کی جانب سے ملک بھر میں موجود ناکارہ اور خستہ ہال بوگیوں کو فروخت کرنے کی ہدایات کی گئی تھی۔وزیر ریلوے اعظم خان سواتی نے کہا ہے کہ اسکریپ کی فروخت کو شفاف بنانے اور زائد ریونیو حاصل کرنے کے لیے ٹھیکیداروں کی مناپلی توڑ ی،ریلوے خسارے میں کمی کے لیے پرانی اور ناکارہ بوگیوں کو فروخت کر رہے ہیں۔اسکریپ کی فروخت کو شفاف بنانے کے لیے سٹورز میں کیمرے نصب کیے گئے ہیں۔ ماضی میں ریلوے اسکریپ کی فروخت میں بھی مافیا کو نوازا جاتا تھا۔من پسند ٹھیکداروں کو نوازنے کے لیے اسکریپ کے وزن میں ہیر پھیر کی جاتی رہی جس کا مکمل خاتمہ کریں گے۔
٭٭٭٭٭

About the author

Peerzada M Mohin

M Shahbaz Aziz is ...

Leave a Comment

%d bloggers like this: