دنیا

مغربی افریقہ میں سرگرم بوکو حرام سربراہ ابو بکر شیکا نے خودکشی کرلی،داعش کا دعویٰ

مغربی افریقہ میں سرگرم جہادی گروپ داعش نے دعوی کیا ہے کہ بوکو حرام کے رہنما ابو بکر شیکا نے گزشتہ ماہ دھماکا خیز مواد سے خود کو ہلاک کر لیا۔میڈیارپورٹس کے مطابق مغربی افریقہ میں سرگرم شدت پسند تنظیم اسلامک اسٹیٹ ویسٹ افریقہ پروینس(آئی ایس ڈبلیو اے پی)نے جاری کردہ اپنی ایک تازہ آڈیو میں دعوی کیا کہ جہادی گروپ بوکو حرام کے رہنما ابو بکر شیکا نے اس کے ساتھ لڑائی کے دوران خود ہی اپنی جان لے لی۔آئی ایس ڈبلیو اے پی نے اپنی آڈیو ریکارڈنگ امریکی خبر رساں ادارے کے ساتھ شیئر کی اور بتایا کہ کیسے ابو بکر نے خود اپنے آپ کو ہلاک کر لیا۔ اس میں تنظیم کے رہنما ابو مصعب البرانوی کو یہ کہتے ہوئے سنا جا سکتا ہے کہ شیکا نے ایک دھماکہ خیز خود کش بیلٹ پہن رکھی تھی اور آٹھ مئی کے روز اسی بیلٹ کو اڑا کر اپنی جان لے لی۔اس آڈیو بیان کے مطابق شیکا نے دنیا میں ذلیل ہونے کے بجائے آخرت میں ذلیل ہونے کو ترجیح دی۔ اللہ نے انہیں جنت میں بھیجنے کا فیصلہ کر لیا۔اس آڈیو میں یہ تفصیل بھی بیان کی گئی ہے کہ آئی ایس ڈبلیو اے پی نے کس طرح سامبیسا کے جنگلوں میں بوکو حرام کے قائد کو نشانہ بنانے کے لیے اپنے چھاپہ ماروں کو وہاں تک بھیجا جنہوں نے ابو بکر شیکا کو اپنی رہائش گاہ میں بیٹھے پا یا اور پھر شدید لڑائی شروع ہوئی۔ اس کے مطابق وہاں سے وہ پیچھے ہٹنے پر مجبور ہوئے اور پھر فرار ہونے میں بھی کامیاب ہو گئے، وہ جنگلوں میں بھی پانچ روز تک چھپے رہنے میں کامیاب رہے تاہم اس کے جنگجو ان کا تعاقب کر تے رہے اور بالآخر پانچ روز بعد ان کا پتہ لگانے میں کامیابی مل گئی۔ادھرنائجیریا کی فوج کا کہنا تھا کہ وہ اس پورے معاملے کی تفتیش کر رہی ہے۔
٭٭٭٭٭

About the author

Peerzada M Mohin

M Shahbaz Aziz is ...

Leave a Comment

%d bloggers like this: